پاکستان اور جرمنی کے باہمی تعلقات کے 70 سال مکمل ہونے پر جرمن بحریہ کے جہاز ، ایف جی ایس بایرن کا کراچی کا دورہ

0
German Navy ship FGS Bayern/ایف جی ایس بائیرن
Image Source: ISPR

کراچی: جرمن بحریہ کے جہاز ایف جی ایس بائیرن نے آٹھ سے بارہ ستمبر دو ہزار اکیس تک کراچی کا دورہ کیا۔ اس دورے کا مقصد پاکستان اور جرمنی کے درمیان ستر سالہ تعلقات کی تجدیدتھا۔

پڑھیں: Pakistan Navy Inducts Its First Long Range Maritime Patrol (LRMP) Jet

ایف جی ایس بائیرن کا چار روزہ دورہ ہاربر اور سی فیز پر مشتمل تھا۔ ہاربرفیزمیں مختلف ہاربر ایونٹس ، سوشل کالز ، نمایاں مقامات کے دورے ، پیشہ ورانہ موضوعات پر ٹیبل ٹاپ ڈسکشنز ، کراس شپ وزٹ اورآن بورڈ عشائیے شامل تھے۔ جرمن جہاز کے ایک وفد نے بانیِ پاکستان کو خراج عقیدت پیش کرنے کے لیے قائداعظم کے مزار پر حاضری دی اور پھولوں کی چادر چڑھائی۔

German Navy ship FGS Bayern/ایف جی ایس بائیرن
Image Source: Navy

ہاربر فیز کی تکمیل پر دونوں ممالک کی بحری افواج کے جہازوں کے مابین سمندر میں دوطرفہ مشق بھی کی گئی تاکہ دونوں بحری افواج کے درمیان باہمی تعاون کوفروغ دیا جا سکے۔

پاکستان اور جرمن بحریہ امن کے شراکت دار ہیں اور محفوظ سمندری ماحول کے حصول کے لیے کوشاں ہیں۔ ایف جی ایس بائیرن کا حالیہ دورہ دونوں بحری افواج کے لیے دو طرفہ تعلقات کو فروغ دینے کے ساتھ ساتھ پیشہ ورانہ صلاحیتوں کے فروغ میں بھی کارآمد ثابت ہوا۔

FGS Bayern/ایف جی ایس بائیرن
Image Source: Navy

دونوں ممالک کے درمیان دو طرفہ تعلقات کی سات دہائیاں مکمل ہونے پرپی این ایس ذوالفقار نے بھی اگست دو ہزار اکیس کے آغاز میں جرمنی کی بندرگاہ ہیمبرگ کا دورہ کیا تھا.