پری سی وہ ایک پیاری لڑکی

پری سی وہ ایک پیاری لڑکی

SHARE
پری سی وہ ایک پیاری لڑکی
Image Source: https://www.pinterest.com/

پری سی وہ ایک پیاری لڑکی

برآمدے سے کتابیں تھامے ہوئے گزرتی

تو ایسے لگتا تھا کہکشائوں سے

وہ بھٹک کر ہماری دنیا میں آگئی ہے

وہ کھلکھلاتی تو ایسا لگتا

کہ پھول ہر سو بکھر رہے ہیں

وہ مخملی سا لباس پہنے

کچھ اس ادا سے اڑتی پھرتی

کہ بادلوں کی پری ہوجیسے

نظر جھکا کے وہ یوں گزرتی

کہ جیسے تازہ ہوا کا جھونکا

فضا میں خوشبو بکھیرتا ہے

کلام اس سے کروں میں جا کر

یہ سوچ کر جب سلام کرتا

جواب تھی اس کی مسکراہٹ

جو تاردل کے ہلا سی جاتی

میں اس کے پیچھے لپک کے جاتا

کہ آج مس جو پڑھا گئی ہیں

وہ میرے پلے نہیں پڑاہے

میں کیسے سمجھوں؟

کہاں سے سمجھوں؟

مجھے بتاؤ اے پیاری لڑکی

کیا تم پڑھا دوگی باب سارے؟

تمہیں بہت سی دعائیں دوں گا

نظر جھکا کر وہ مسکراتی

کتاب کھولے مجھے پڑھاتی

حساب سارے وہ باب سارے

میں اسکی پلکوں کو ٹکٹکی باندھے تکتا رہتا

اور اس کے چہرے کے پیچ و خم میں بھٹکتا رہتا

مگر وہ جوں ہی نظر اٹھاتی

تو مجھ کو محوخیال پاتی

قضا سی پلکوں کو پھر اٹھاتی

جھٹک کے سر کووہ تند لہجے میں مجھ سے کہتی

میں تھک گئی ہوں

اور اس ادا پر میں مر سا جاتا

پھر اس کی منت مراد کرتا

وہ مسکراتی

وہ کھکھلاتی

میری نظر سے نظر بچاتی

ذرا تفکر سے مجھ سے کہتی

یہ بات اکثر میں سوچتی ہوں

تمہارا آخر کو کیا بنے گا؟

میں اوڑھ کر پھر نیا لبادہ

اداس پنچھی سا منہ بناتا

اور اندر اندر ہی مسکراتا

چلو شکر ہے اسی بہانے

وہ میرے بارے میں سوچتی ہے

مجھے خیالوں میں کھوجتی ہے

پری سی وہ ایک پیاری لڑکی

NO COMMENTS

LEAVE A REPLY